ہمیں تم سے پیار ہے

مارچ 31, 2011

…شفیق احمد صدیقی…

آج بھارت کے خلاف سیمی فائنل میں پاکستان ٹیم ہار گئی، اس کھیل کے متعلق بڑے بڑے دعوے کئے گئے تھے مگر میچ دیکھ کر بخوبی اندازہ ہوا کہ جیت صرف محنت کی ہوئی ہے اور جس نے جتنی محنت کی اس کو اس کا اتنا ہی صلہ ملا۔

یہاں میچ کی مجموعی صورت حال پر تبصرہ کرنا غیر ضروری ہے کیوں کہ پوری قوم نے پورا دن ٹیلی ویژن سیٹس کے سامنے بیٹھ کر میچ دیکھتے گزارا،جسے کھلی جنگ کا نام دیا جارہا تھا، اس میچ کیلئے بہت دعائیں بھی مانگی گئیں مگر سب بلا سود رہیں، کیوں کہ وہاں صرف دعاوٴں کی نہیں ”دوا“ کی بھی ضرورت تھی

مزید پڑھنے کےلئے یہاں کلک کیجئے

.

 

Advertisements

ایک ہی نعرہ ،راولپنڈی ایکسپریس چلاؤ دوبارہ

مارچ 29, 2011

…نادیہ علی…

راولپنڈی ایکسپریس کے نام سے مشہور شعیب اختر ریٹائرمنٹ کا اعلان کرچکے ہیں،انہوں نے اب تک کا آخری میچ نیوزی لینڈ کیخلاف کھیلا جس میں کرکٹ بورڈ کے چہیتے وکٹ کیپر کامران اکمل نے ان کے دو کیچز ڈراپ کئے،جس پر اسپیڈ اسٹار نے ڈریسنگ روم میں کامران اکمل کی دھنائی کردی ۔

خبر یہی اڑی ہوئی ہے کہ کامران اکمل کی دھنائی پر آفریدی بہت ناراض ہوا

مزید پڑھنے کےلیے یہاں کلک کیجئے

 


تیس مارچ کو کھلی جنگ ہوگی

مارچ 25, 2011

…نادیہ علی…

تیس مارچ کو موہالی میں دنیائے کرکٹ کا سب سے اہم میچ ہوگا،جسے مدر آف آل میچز کہا جارہا ہے ،یہ مقابلہ پاکستان اور بھارت کے درمیان کھلی جنگ کی طرح ہوگا،کیونکہ جس ٹیم نے یہ معرکہ سر کر لیا اسے پھر کس کا ڈر۔

مزید پڑھنے کےلئے یہاں کلک کیجے


شاہد آفریدی نے وعدہ پورا کردیا

مارچ 23, 2011

۔ ۔ ۔ نادیہ علی ۔ ۔ ۔

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی نے تو اپنا وعدہ پورا کردیا،ورلڈ کپ کےلئے پاکستان سے ٹیم کی روانگی سے قبل کپتان نے کہا تھا کہ وہ قومی ٹیم کو سیمی فائنل تک پہنچا دینگے اور پھر سب کے سامنے عیاں ہوگیا کہ کپتان نے اپنے لفظوں کا پاس کیا ۔

آج کا میچ تو ٹیم باآسانی جیت گئی ،ویسٹ انڈیز کے بارے کہا جا رہا تھا کہ کالی آندھی میں اب دم خم نہیں رہا ،اب تو نووارد ٹیمیں بھی اسے پریشان کردیتی ہیں۔

مزید پڑھنے کےلئے یہاں کلک کیجئے


کیچ ڈراپ اسپیشلسٹ …کامران اکمل

مارچ 9, 2011

…نادیہ علی…

کامران اکمل نے گزشتہ روز ورلڈ کپ میں نیوزی لینڈ کے ہاتھوں پاکستان کرکٹ ٹیم کی شکست یقینی بنائی۔مگرپتا نہیں کون سی گیدڑ سینگی ہے اس یتیم صورت اورناکام وکٹ کیپر کے پاس کے ہردفعہ قومی ٹیم کو رسوا کرنے کے باوجود کامران اکمل کو ایک اور موقع دے دیا جاتا ہے ۔

آفریدی اور اعجازبٹ کے خاص الخاص وکٹ کیپر نے ٹیلر کو پہلا چانس صفر پر دیا اور پھر چار رنز پر ان کا آسان کیچ گرا دیا۔ اس کے علاوہ انہوں نے چار رنز پر اسکاٹ اسٹائرس کا کیچ بھی چھوڑا۔

مزید پڑھنے کے لئے یہاں کلک کیجئے


علیم ڈار…مبارک ہو مبارک

اکتوبر 7, 2010

…ملک شکیل…

پاکستان کےامپائر علیم ڈار نے ڈیوڈ شیفرڈ ٹرافی دوسری مرتبہ جیت لی ہے ۔انہیں بنگلور میں ”آئی سی سی امپائر آف دی ایئر 2010 “کا ایوارڈ دیا گیا۔42 سالہ علیم ڈار کو10 ممبرز پر مشتمل سلیکشن کمیٹی کی جانب سے مشترکہ طور پر اس ایوارڈ کا حق دار قرار دیا گیا ۔اس کمیٹی میں درحقیقت 10 کپتان اور ان کے ساتھ ساتھ آئی سی سی کے 8 ریفریز پر مشتمل ایلیٹ پینل بھی موجود تھا جس نے علیم ڈار کو ہی اس اعزاز کے لیے معتبر جانا اور گزشتہ 12 ماہ کے دوران ان کی کارکردگی کو سراہا ۔

یہ لگاتار دوسرا سال ہے جب علیم ڈار کو اس اعزاز کے لیے چنا گیا ہے۔ اس ٹرافی کا نام انگلینڈ کے مرحوم امپائر ڈیوڈ شیفرڈ کے نام پر رکھا گیا ہے ۔ٹرافی وصول کرنے کے بعد علیم ڈار نے کہا۔”میں پاکستان میں اس وقت بھی کرکٹ کھیل رہا ہوں۔ چناں مسلسل کرکٹ کی پریکٹس نے مجھے اچھا امپائر بننے میں مدد دی اور پچھلے کچھ ہفتوں میں ، میں نے کئی سنچریاں بھی بنائیں۔ان چیزوں نے میری امپائرنگ اور میرے اعتماد میں مزید اضافہ کیا۔یہ میرے لیے اعزاز کی بات ہے کہ دوسرے سال مسلسل مجھے ،امپائر آف دی ایئر کے ایوارڈ کا حق دار سمجھا گیا۔“

Read the rest of this entry »


آ ہ…قومی کرکٹ ٹیم اپناریکارڈ نہ توڑ سکی

اگست 7, 2010

…قاضی محمد یاسر…

افسوس تو ہے تو،صرف اس بات کا کہ قومی ٹیم اپناہی بنایا ہوا ریکارڈ نہیں توڑ سکی۔جو اس نے11 اکتوبر 2002کو آسٹریلیا کیخلاف شارجہ میں بنایا تھا ۔وہ ریکارڈ کچھ یوں تھا کہ قومی ٹیم اس ٹیسٹ میچ کی دوسری اننگ میں53 رنز پر آؤ ٹ ہوگئی تھی۔

دیکھا جائے تو آج کوشش تو بہت کی قومی ٹیم نے کہ وہ ریکارڈ توڑسکے ۔

حد تو یہ ہے کہ عمر امین نامی کھلاڑی ،جس نے سب سے زیادہ 23رنز بنائے ، نے جلدی آؤٹ ہونے کیلئے انگلش کھلاڑیوں کو تین کیچ بھی دئیے۔مگر وہ پکڑ نہ سکے۔موصوف کے بارے میں اطلاعات ہیں کہ وہ ٹیم کے مشکوک کھلاڑی کامران اکمل کے کزن ہیں اوران کی نامزدگی میں بھی ان کا ہاتھ ہے۔

یاد رہے کہ آج جس گراؤنڈ پر قومی ٹیم کھیلی ہے اسی گراؤ نڈ پر برائن لارا نے 501رنز بنائے جبکہ ظہیر عباس نے بھی اسی گراؤنڈ پر 276رنز بنائے تھے۔

ویسے ایک ریکارڈ تو قومی ٹیم نے ضرور بنایا ہے اور وہ یہ ہے کہ آج پہلی اننگ میں بنائے گئے 72رنز انگلینڈ کے خلاف کسی بھی ٹیسٹ میں کم ترین اسکور ہے ۔

 انہوں نے اپنے گزشتہ ٹیسٹ میچ کی اننگ میں 80رنز پر ڈھیر ہونے کے ریکارڈ کو مستحکم کرکے 72رنزکرلیا۔تاہم ان کی کارکردگی سے لگتا ہے کہ یہ ٹیم اپنی خامیوں کے باعث اپنا ریکارڈ توڑنے میں کامیاب ہو ہی جائے گی۔