پرویز مشرف…آپ کی ضرور ت ہے

…یامین جعفری…

سابق صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف صاحب قوم آج بھی آپ کے دور کو یاد کرتی ہے۔آپ کی جانب سے آل پاکستان مسلم لیگ کے اعلان نے وطن سے محبت کرنیوالوں کے دلوں میں خوشی کی لہر دوڑا دی ہے۔

میڈیا کے تمام تر منفی پروپیگنڈے کے باوجود عوام یہ نہیں بھولے کہ آپ نے اپنے 9 سالہ دور میں ڈالر کو مضبوطی سے ایک جگہ جمائے رکھا ۔ جی ڈی پی کی شرح 8 فی صد تک پہنچا کر ملک میں خوش حالی کا دور پیدا کیا جسے بدقسمتی سے ایک ہی جھٹکے میں زمین بوس کر دیا گیا آج ملک کے عوام میں غربت کی شرح آپ کے دور کے مقابلے میں دوگنی سے زیادہ ہو گئی ہے۔ غیر ملکی سرمایہ کار ملک سے اپنی دولت بیرون ملک لے جانے ہی میں اپنی عافیت سمجھتے ہیں اور عوام اس سنہرے دور کی بے چینی سے یاد کرتی ہے جب چینی 22 روپے، آٹا12 روپے کلو، دالیں20 اور25 روپے کلو تھیں۔

آج تو دال کا بھاؤ بھی دو سو روپے تک پہنچ چکا ہے اور عوام سمجھتے ہیں کہ اگر انہیں دال ہی میسر آ گئی تو عید ہو گی۔ لوگ بھوک اور بے روزگاری سے تنگ آ کر خود کشیاں کر رہے ہیں۔

پرویز مشرف صاحب آپ جلد از جلد پاکستان آنے کا پروگرام بنائیں۔ قوم آپ کے لیے دیدہ و دل فرش راہ کئے ہوئے ہے۔

 

………………………………….

”یامین جعفری سینئر صحافی ہیں اور ایک قومی اخبار سے وابستہ ہیں۔دوسرارخ بلاگ پر ان کا مئوقف شکریہ کے ساتھ پیش کیا جارہا ہے ۔قارئین سے گزارش ہے کہ وہ موضوع کی حمایت یا مخالفت میں مدلل آراء دیں ۔ تاکہ موضوع کا احاطہ ہوسکے اور صحیح رائے قائم کی جاسکے۔ “

Advertisements

پرویز مشرف…آپ کی ضرور ت ہے پر 10 جوابات

  1. کاسف نصیر نے کہا:

    جی جلد از جلد پاکستان آنے کا پروگرام بنائیں، ڈاکڑ عبدلقدیر خان، لال مسجد والے، لاپتہ افراد کے اہل خانہ، اکبر بگتی کے ورثہ، ڈاکڑ شازیہ اور سونے پر سہاگہ چیف جسٹس اوف پاکستان آپ کا استقبال کرنے کے لئے بے چین ہیں۔
    یامین جعفری صاحب، پرویز مشرف اور اسکے حوارین نے نو برس اس ملک کا جو حال کیا ہے اس کی طرف نظر کرتا ہوں تو مجھے زرداری اور گیلانی کے دھلائے دھلائے فرشتے معلوم ہوتے ہیں۔ آپ ڈالر کی بات کررہے ہیں اور لوگوں کو ڈالر کی نہیں آٹے کی ضرورت ہے اور پرویز مشرف کے دور میں آٹا 13 روپے سے 35 روپے تک پہنچا، پیڑول اور ڈیزل کی قمیت میں 200 فیصد اضافہ ہوا، غیر ملکی قرضہ تین گنا بڑھ گئے اور جس معیشت میں جس آٹھ فیصد کے حساب سے اضافہ کی آپ بات کررہے ہیں بتاتے ہوئے یہ مت بھولیں اس اضافہ میں خدمت کے شعبہ کا حصہ 80 فیصد اور پیداواری شعبہ کا حصہ صرف 20 فیصد ہے اور زرمبادلہ کے جن ذخائر کی بات کی جاتی ہے اس میں چالیس فیصد سے زائد قومی اداروں کی کوڑیوں کے دام نجکاری کے نتیجے میں پیدا ہونے والے سرمایہ کا تھا اور باقی امریکی امداد کا۔ ٹکسٹائل کے ساتھ شوکت عزیز نے دشمنی نکالی ہے وہ شاید آپ جانتے ہی نہیں ہیں
    اگر آپ کی یادشت کمزور ہے تو آپ دوسرے سے یہ توقع نہ کریں کہ وہ مشرف کا نو سالہ سیاہ دور بھول چکے ہیں۔مشرف پاکستان ضرور آئے گا لیکن اسکے لئے اقدار کی کرسی نہیں پھانسی کا پھندا ہے۔

  2. پرویز مشرف کو دوبارہ حکومت دو تا کہ وہ شہریوں کو دوبارہ بیچ سکے، لال مسجد میں لڑکیاں شہید کر سکے، چیف جسٹس کو معطل کر سکے۔ ملک کو بیچ سکے۔

    • Arshad Malik نے کہا:

      پرویز مشرف صاحب کا دور بلا شبہ ایک سنہری دور تھا جس میں ہر شخص کے پاس پیسہ تھا اور عوام اور عام لوگوں کی قوت خرید میں بھی اضافہ ہوا تھا۔ مشرف صاحب نے عوام کو لوڈ شیڈنگ سے مکمل نجات دلا دی تھی جو کہ پچھلی کوئی بھی حکومت نہیں کر سکتی جو کہ ایک بہت بڑی بات ہے۔
      مشرف صاحب کو فوجی آمر کہنے والے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں۔ اور ایسی بے غیرت جمہوریت سے تو ہمیں فوجی آمر ہی اچھا ہے۔ پرویز مشرف صاحب کو اللہ زندگی دے
      اور پاکستان کا حاکم اعلیٰ بنائے۔ آمین۔
      میرا ووٹ مشرف صاحب جیوے مشرف۔

  3. عمران نے کہا:

    درست فرمایا! ھم سے زیادہ اس ملک کہ پرویز مشرف کی ضرور ت ہے۔ میڈیا اور دیگر سیاسی لوگ اپنی دوکان چمکانے کے لئے تمام منفی پہلو سامنے لا کر ڈھول بجاتے رہتے ہیں۔ ان تمام حقائق کے سامنے آنے کے بعد ان سب کو ڈوب مرنا چاہیے۔

  4. ھارون اعظم نے کہا:

    موجودہ حکومت بھی کسی حد تک مشرف صاحب کا تحفہ ہے۔

  5. ABDULLAH نے کہا:

    مشرف کے پاس کوئی جادوکا چراغ تو ہے نہیں،جب تک یہ قوم نہیں سدھرے گی یا کم سے کم سدھرنے کا تہیہ نہیں کرلے گی کوئی کچھ نہیں کرسکتا!!!!!!!!
    😦

  6. ABDULLAH نے کہا:

    مشرف بھی اکیلا چنا ہی تھا بہت سارے کرپٹ لوگوں کے بیچ میں،
    مگراس نے فوج اور پولس کو خاصی حد تک پاک کرنے کی کوشش ضرورکی یہ تو آپ مانتے ہیں نا؟؟؟؟؟؟
    خیر یکم اکتوبر اور یکم نومبر بھی کچھ زیادہ دور نہیں،اگر مشرف آنا چاہتے ہیں تو آنے دیں کم سے کم یہ تو پتہ چلے کہ کیا کیا کیا اور کیا کیا نہیں کیا!!!!!!!!
    حالانکہ پاکستان کو تباہی سے واپس لاناجبکہ خزانہ خالی ہوچکا تھا نواز شریف ہاتھ جھاڑ چکے تھے،امریکا حملے پر تلا بیٹھا تھا فوج پٹاخوں پر چل رہی تھی،
    کتنے معصوم نوجوان جی ڈی پائلٹ بننے کے شوق کی بھینٹ چڑھے کہ طیارے تباہ حال تھے اور مینٹینس کے لیئے پیسہ نہیں تھا!!!!
    آج خود بہترین اسلحہ بنارہی ہے،یہ سب آسمان سے نازل نہیں ہوا!!!!!!!!!!

    اسی طرح بیک جنبش قلم تمام سیاست دانون کو ریجیکٹ کردینا بھی ماورائے عقل بات ہے!
    مسئلہ یہ ہے کہ اچھے دیانتدار اور محنتی لوگ ہر پارٹی میں موجود ہیں قلیل تعداد میں ہی صحیح،انہیں ایک پلیٹ فارم پر ہونا چاہیئے،اچھے ٹیکنو کریٹس بڑے بڑے اداروں کے سربراہ ہونا چاہیئیں،تب کہیں یہ ملک صحیح راہ پکڑے گا

  7. rashid mohammad نے کہا:

    پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے ادوار میں اوورسیز پاکستانیوں کو خوب لوٹا جاتا ہے ۔غنڈا ٹیکس لگا دیاجاتا ہے ۔ائیرپورٹ پر آنے والوں سے پیسے نکالے جاتے ہیں ۔جبکہ ریلوے اسٹیشنوں کا بھی یہی حال ہے ۔
    پاکستان کے اندر رہنے والوں کو بہت سے باتوں اور کرپٹ حکمرانوں کے کارناموں کا پتا ہی نہیں ہے ۔یہ لوگ پاکستان کو لوٹ لوٹ کے ارب پتی بلکہ کھرپ پتی ہو گئے ہیں ۔لوگ پھر بھی نہیں سمجھتے۔
    کسی اچھے انسان کی پاکستان کے اندر کوئی قدر نہیں ہے ۔پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن کسی کو آگے نہیں آنے دیتے ۔یہ نہیں چاہتے کہ پاکستان ترقی کرے ۔صر ف مشرف صاحب ہی ہیں ۔جو عوام کو سیدھا راستہ دکھا سکتے ہیں۔

  8. اگر جناب مشرف صاحب آ بھی گءے تو کیا انہیں بڑے کیسز کا سامنا نہیں کرے گا؟؟؟؟؟؟؟؟؟

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: