یوم باب الاسلام ،اورکہاں ہے محمد بن قاسم؟

…دانیال دانش…

ماہ رمضان المبارک کو رحمتوں اور برکتوں کے علاوہ فتوحات سے بھی خصوصی نسبت ہے۔ اس مبارک مہینے میں مسلمانوں نے اوائل اسلام میں کئی اہم فتوحات حاصل کیں۔ برصغیر میں سندھ کی سرزمین کو باب الاسلام کہلانے کا اعزاز بھی اسی مہینے میں حاصل ہوا۔

محمد بن قاسم نے10رمضان93 ھ کے مبارک دن اس سرزمین پر فیصلہ کن فتح حاصل کی۔ جس کے بعد سے سندھ کو اسلام سے خصوصی نسبت ہے۔ اسلام اور مسلمانوں کے ساتھ اسی خصوصی رشتے کو نمایاں کرنے کیلئے10رمضان المبارک کو یوم باب الاسلام کے طور پر منایا جاتا ہے۔ کیونکہ اس کے بعد برصغیر کے دوسرے علاقوں میں بھی اسلام کی ترویج و اشاعت کے دروازے کھلے اور برصغیر کے لوگ اس کثرت کے ساتھ اسلام میں داخل ہوئے ۔

 غازی محمد بن قاسم کی فتح کے نتیجے میں ڈیڑھ ہزار سال سے اسلام اس سرزمین کی خصوصی شناخت ہے۔ ہندوستان پر ہزار سال سے زیادہ عرصہ تک مسلمانوں کی حکومت رہی اور آج بھی پاکستان اور بنگلہ دیش کی خصوصی شناخت اسلام ہی ہے جبکہ ہندوستان اور جنوبی ایشیا کے دیگر ملکوں میں بھی مسلمانوں کی آبادی کروڑوں میں ہے۔

17سالہ محمد بن قاسم کو عرب تاجروں کی بیواؤں کوچھڑانے کیلئے حجاج بن یوسف نے بھیجا۔جسے ایک مسلمان مغوی لڑکی نے جیل سے درد بھرا خطلکھا تھا ۔ ستر ہ سالہ نوجوان بحیرہ عرب میں راجہ داہرکیپالتو بحری قزاقوں کو مزہ چکھانے اور ہندوراجہ کا غرور خاک میں ملانے کیلئے کیا نکلا۔سندھ کا نقشہ ہی بدل گیا۔

فتح دیبل کے بعدہندوؤ ں کو ایک جگہ جمع کر کے اس سترہ سالہ سپہ سالارنے کہا تھا کہ ”میں کوئی ظالم و جابر فاتح نہیں ہوں ۔میں تو دکھیوں اور مظلوموں کا حامی ہوں اور انہیں ظالموں سے نجات دلانے کے لئے یہاں آیا ہوں میں مسلمان ہوں ۔ہر مسلمان کا بنیادی عقیدہ یہ ہے کہ تمام مخلوق کا خالق اللہ تعالیٰ ہے ‘جو ایک ہے ۔جس کا کوئی شریک نہیں ۔اسلام کی تعلیم کے مطابق اچھا وہ ہے جو اللہ کے بندوں کے ساتھ اچھا سلوک کرے“ ۔

آج اس اسی سندھ کا یہ حال ہے کہ دیبل سے کچھ فاصلے پر آباد شہر کراچی کی بیٹی کو اسی کے ہم وطن مسلمان بھائیوں نے اسے اغوا کرکے استعمار کے حوالے کردیا ۔وہ جن کا فرض تھا کہ محمدبن قاسم کے نقش قدم پر چلتے وہ راجہ داہر کی فوج کے سپاہی بنے نظر آتے ہیں۔

امت مسلمہ کی بیٹی کی نظر یں آج اس محمد بن قاسم کو ڈھونڈ رہی ہیں۔کہاں ہے وہ محمد بن قاسم ،جس نے آج کے دن مسلم بیٹیوں کو اغوا کرنے والے کا غرور خاک میں ملا دیا تھا۔ہے کوئی جو اس سترہ سالہ سپہ سالار کی تقلید کرسکے ۔جو مظلوم بیٹی کو استعمار کے شکنجے سے چھڑا کرلاسکے۔

 

Advertisements

یوم باب الاسلام ،اورکہاں ہے محمد بن قاسم؟ پر 6 جوابات

  1. بدقسمتی کی بات يہ ہے اسی سندھ ميں ايسے لوگ بھی ہيں جو محمد بن قاسم کی بجائے راجہ داہر کو اپنا ہيرو کہتے ہيں

  2. Usman نے کہا:

    امریکی شہری عافیہ صدیقی کا رونا اب بس کریں اور پاکستان میں جو لوگوں پر ظلم جاری ہے اس کا بھی کبھی بھولے سے ماتم کرلیں۔ عافیہ صدیقی والے قصے میں دراصل غصہ امریکہ سے ہے۔ ورنہ ایسی کئی عافیہ صدیقی وطن عزیز کی سرحدوں کے اندر ستم کا شکار ہیں۔

    • دانیال دانش نے کہا:

      افسوس صد افسوس آپ بھی انہیں امریکی شہری سمجھتے ہیں۔اس کی بوڑھی ماں اور بہن میڈیا کے سامنے رو رو کر تھک گئیں کہ وہ امریکی شہر ی نہیں ہے ۔مگر آپ نے دھڑلے سے کہ دیا کہ وہ امریکی شہری ہے ۔اگر آپ سچے ہیں تو پھر ثبوت پیش کریں ۔
      ویسٹرن میڈیا کی ہی نہ سنیں کچھ کھلی آنکھوں سے بھی جہاں تک دیگر ستم رسیدہ خواتین کی بات ہے ۔تو دوسرا رخ بلاگ کا حصہ ہم بنیں ہی اس لئے ہیں کہ یہ جمود کے خلاف جنگ کا دوسرانام ہے ۔یہاں آپ کو وہ تحریریں بھی مل جائیں گی جن کے متعلق لکھتے ہوئے لوگوں کے قلم جلتے ہیں۔

      • Imran Jadoon نے کہا:

        دانیال دانش صاحب ۔ آپ نے درست کہا ہے کہ ڈاکٹر عافیہ امریکی شہر ی نہیں ہے ۔یہ بات ان کے مخالف وکلا ء تک کمرہ عدالت میں کہہ چکے ہیں۔
        مگر ہمارا ملک جو اسلام کے نام پر بنایا گیا ۔اس میں ایسے لوگ بستے ہیں جن کو اسلام اور لفظ مسلمان تک سے چڑ ہے ۔جبکہ کچھ کا تو ہیرو ہی راجہ داہر ہے ۔ایسے لوگوں کو سمجھایا نہیں جاسکتا ۔
        کیا خوب اقبال نے کہا ہے کہ
        یہ مسلماں ہیں جنہیں دیکھ کے شرمائیں یہود

  3. Hameed نے کہا:

    اتنے سارے جماعتی کس مرض کی دعا ہيں؟ منور حسن کسی کو بھجواديں محمد بن قاسم بنا کے..

  4. khokhar976 نے کہا:

    میرے خیال میں عدالت میں ثبوت مہیا کر کے ان خاتون کو چھڑایا جا سکتا ہے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: