17 اگست1988 کو ضیاء الحق کے طیارے کی تباہی کا ذمہ دارکون تھا؟

تبصرہ کیجئے۔

مختصر مگر دلائل کے ساتھ بتائیے۔تاکہ اس حوالے سے آپ کی ذاتی رائے
 اور معلومات لوگوں تک پہنچ سکیں۔ 

Advertisements

7 Responses to 17 اگست1988 کو ضیاء الحق کے طیارے کی تباہی کا ذمہ دارکون تھا؟

  1. پہلے آپ کو يہ سوال محمد اعجاز الحق سے پوچھنا چاہيئ
    حالات و واقعات کے مطابق جو کہانی ميرے ذہن ميں بنتی ہے يہ ہے کہ جنرل ضياءالحق امريکا کی خواہش کے تحت افغانستان ميں روسی تسلط ختم کرنے کے ساتھ پاکستان دوست حکومت قائم کرنے ميں کامياب ہونے والا تھا جو امريکا کو پسند نہ تھا اور اس نے ہماری قوم ميں موجود ضمير فروشوں کو ڈالر دے کر ضياءالحق کے ساتھ فوج کے کئی اچھے جرنيل بھی مروا ديئے ۔ اگر اس ميں امريکا کا ہاتھ نہ ہوتا تو کرچی ميں امريکی قونسليٹ کے چند نچلے درجے کے ملازميں کے مرنے پر طوفان مچانے والا امريکا اپنے سفير اور سی آئی اے کے ڈائريکٹر کے مرنے کے بعد چُپ کيوں رہا ؟
    ميجر جنرل محمود علی درانی کا نام اس سلسلہ ميں اخبارات ميں آيا تھا

  2. کاشف نصیر نے کہا:

    اللہ بہتر جانتا ہے، ہم کیوں ادھر ادھر کی ہانکے
    بابا گڑھے مردوں کو میں کھینچو، پہلے ہی مسئلے کم ہیں!

  3. Shumaila نے کہا:

    I have no affiliation with any political party. But in my opinion Mr. Zia was a great leader of Ghaddar-e-Waton Mir Jafar and Mir Sadaq Club. If he not take over the civil government of Pakistan today you will not see this type of moral disaster of corruption in the country. He is not president of Pakistani people. He was doing duties of his American Lords and when his job finish, his masters finish him from this earth as they killed their beloved King of Iran Raza Shah Pehalvi, Saddam Hussain etc.

  4. Mera Pakistan نے کہا:

    زیادہ امکان تو یہی ہے کہ یہ کام امریکہ کا تھا کیونکہ افغانستان کی جنگ کے بعد وہ خود سر ہو گئے تھے اور افغانستان کی فتح کا کریڈٹ لینے لگے تھے۔ لیکن امریکی سفیر کی موت سے تھوڑا شک ہوتا ہے کہ امریکیوں نے اگر جنرل ضیا کو مروانا ہوتا تو وہ امریکی سفیر کو کبھی اس کے ساتھ نہ جانے دیتے۔ مگر کہنے والے کہتے ہیں کہ امریکی سفیر کو مروایا گیا تا کہ امریکی الزام کو غلط ثابت کیا جا سکے۔

  5. فیصل نے کہا:

    معاف کیجیے مگر اس پوسٹ کا مقصد مجحے سمجھ نہیں آیا۔

  6. zara نے کہا:

    Haven’t you read "Exploding Mangoes” By Mohammad Hanif? if not please read it you would get all your answers.

  7. haroonazam نے کہا:

    افتخار صاحب کی بات سے متفق ہوں۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: